خالد ندیم، اللّہ رکھّی اورآتـشی

share this article

Join the Conversation

4 Comments

  1. مجھے لگتا ہے سکردو کے لیے ان الفاظ سے بہتر کوئی نہیں ہوسکتے ” کہ یہ دل کے کسی نہہ خانے میں رکھی خوشی کا نام ہے” سکردو کا یہی اثر ہے کہ میری سکردو سے آخری ملاقات کو 12 سال ہوگئے ہیں پر سب تازہ ہیں۔ اس کی یاد یقیناً وہ پوشیدہ مقام ہے جہاں غمِ دوراں سے گھبرا کر میں رخ کرتی ہوں۔ میرے بچپن کی بہترین یادیں شنگریلا میں چھپن چھپائی اور یو چنگ میں ریسیں لگاتے گزری ہیں۔ ایک ایسی محبت جس کا ذکر کرتے ہوئے آنکھوں میں چمک آجاتی ہے۔
    “چکن کڑاہی اور مٹر پلاؤ کا کک جتنا بھی چاہے مزید ستیاناس نہیں کرسکتاا”
    “میری چھٹی کا ختم ہوجانا celebrate کررہے تھے”
    تحریر کے بہترین جملے ہیں۔
    پڑھنے میں بہت مزہ آیا۔ لکھتے رہیں!

    1. پسندیدگی کا بہت شکریہ اور اتنی تفصیل سے تحریرکے چندگوشوں کواجاگرکرنے کا بھی ۔ آپ توبہت بھاگیہ وان ہیں کہ شنگریلا میں چھپن چھپائی اوریوچنگ میں ریسیں لگائی ہوئی ہیں ۔
      اللہ اس وادی کواسی طرح خوشیوں سے لہلہاتا رکھے کہ اس کے دم قدم سےبہت سی محبتیں دلوں میں آباد ہیں۔

Leave a comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *