قصّہ ایک ریٹائرمنٹ کا
گلگت ہیڈکوارٹر سے اچھا سب سے پہلے تو یہ بتاتے چلیں کہ بقیہ کہانیوں کی طرح یہ کہانی بھی ہماری ذاتی زندگی اور اس سے جڑے کچھ پردہ نشین حضرات اور بے پردہ بیبیوں کے گرد گھومتی ہے۔ کسی اور فرد یا افراد سے مماثلت محض اتفاقیہ ہوگی۔ اس تنبیہہ کی ضرورت اس لیے بھی […]
Our London Family
One Year On … Around two miles west of the incorporated township of Lucan-Biddulph on an embankment beside County Road 20, rest the crumbling structure of what once was a narrow span railway bridge. Referred to as ‘hole in the wall’ by Ron Brown of  “Nobody knows Ontario like Ron Brown” fame, this was the site […]
ایمن آباد کی چندراوتی
اور اختر شیرانی کا رومان جب مجھے چندراوتی سے محبت شروع ہوئی اسے مرے ہوئے تیسراروز تھا شہاب نامہ کا ایک باب چندراوتی کے نام ہے۔ پنجاب پبلک لائبریری میں لیڈی میکلیگن کالج کی چندراوتی اور گورنمنٹ کالج کے شہاب بیک وقت ایک ہی کتاب کے امیدوار تھے۔ ایک لڑکی کی تعریف سے جھینپتے قدرت […]
میجر اظہر شہید
اظہر اب ہم میں نہیں ہے، خدا معلوم ہم پلاٹون میٹس کا کیا حشر ہو
کُشتیا 71
جیسور کے پڑوس میں کُشتیا کے دھان کے کھیتوں میں 27 بلوچ کے جوانوں پر ٹوٹی افتاد کی داستان
مستان دلبر جان
پنجابی اسٹیج دے ہاسیاں دے بے تاج بادشاہ ایک انمول نگینے دی یاد وچ
دُلاّ بھٹی  –  ਦੁੱਲਾ ਭੱਟੀ
ਢਾਹਵਾਂ ਦਿੱਲੀ ਦੇ ਕਿੰਗਰੇ ڈھاواں دلّی دے کِنگرے
شاہ جمال کا بھوت
بابا بلھے شاہ کے قصور سے شاہ جمال کے شادمان تک ۔ ایک انقلاب کی روداد ایک خون آشام چکر کا ماجرا
دوستوں کے درمیاں وجہِ دوستی ہے توُ
ناصرؔ کاظمی کا کلام اور اُس سے جُڑی کچھ بھُولی بسری یادیں، ہمارے بے نوا شاعر کی برسی پر
ਜੌਹਰ ਦਾ ਚੌਬਾਰਾ  | جوہل داچوبارہ
ਗੁਰਮੁਖੀ ਵਿੱਚ ਪੜ੍ਹੋ تے اواگت بنگلے دی ڈِنگی پکّی یار او جوہلاں دے اڈے تے جتھوں اٹی دے ٹانگے چلدے سی، پکی دے پرلے پاسے اک چوبارہ ہندا سی۔ تھلے چاء داہوٹل اتے الیکشن آفس۔ او ہالے وی اوتھے ای اے؟ تینوں او چوبارہ کتھوں چیتے آگیا اپنے تایازاد بھرا حفیظ نال فون تے گل […]
کارگل کےپہاڑ
ہمالیہ کے پہاڑوں سے ایک پوسٹ کمانڈراوراس کے شیردل جوانوں کے فوجی شب وروز کی کتھا۔
Kargil – Tales & Bodies …
Remembering a conflict that crossed onto new heights on alien land and its warriors both celebrated and disowned alike.
عہدیوسفی
ابن انشؔاء اور ڈاکٹر ظہیرفتح پوری نے موجودہ دور کو مزاح کا عہد یوسفؔی کہا ہے۔ یوسفؔی صاحب محفلوں میں اکثرکہا کرتے تھے کہ عہدِ یوسفیؔ کا مطلب میں تو یہی سمجھتا ہوں کہ ایسا عہد جس میں ہرایک کی قمیض کا دامن آگے سے پھٹا ہواہے اورہرایک کی حسرت ہے کاش پیچھے سے پھٹا ہوتا ۔
ریل گاڑی اور چھوٹی سی دنیا
کوٹری سے لانڈھی کی ریلوے پگڈنڈی پر ایک یادوں بھرا سفر۔ اپنی چھوٹی سی دنیا کو لوٹنے اور پرانے منظروں کو کھوجنے کی کتھا۔
ٹکسالی گزرگاہ
چناب اور جہلم کے دو آب سے راوی کے اس پار، بادشاہی مسجد کی قربت میں کچھ ذکر ٹکسالی کااور کچھ باتیں شاہی محلے کی
A Tale of Three Tiered Tombs
Exploring Bahauddin Zakariya's tomb in Multan and three tiered tradition in South Punjab and Sind